اُردُولُغت

اردو ذخیرہ الفاظ

آن لائن اردو لغت مفصل تلاش کے ساتھ

https://www.urdulughat.pk/Post/mustaqbil-by-khalil-jabran

مستقبل

مستقبل

 

                               حال کی دیواروں کے پیچھے میں نے  انسانیت کے نغمہ ہائے عبودیت سنے ، گھنٹوں کی آوازیں سنیں، جو عبادت گا ہ  جمال میں آغاز کا اعلان کرتی ہوئی ، ایتھر کے ذرات کو متحرک کر رہی تھیں۔۔۔۔ ہاں! ان گھنٹوں کی آوازیں سنیں جنہیں قوت نے احساسات کی دھات کو پگھلا کر بنایا ۔۔۔۔ اور امنے مقدس ہیکل۔۔۔۔۔۔ قلب انسانی۔۔۔۔۔۔ پر لٹکا دیاتھا!

مستقبل کے پیچھے میں نے دیکھا کہ وہ مشرق کی طرف منہ کئے فطرت کے سینہ پر سربسجدہ ہے، اور صبح ۔۔۔۔ صبح حقیقت کے ہجوم نور کا منتظر ہے!

میں نے تباہ شدہ شہر کو دیکھا ، جس کے آثار میں سے ، شبنم کے ان چند قطروں کے سوا کچھ باقی نہ تھا، جو لوگوں کو نور کے مقابلہ میں ظلمت کی شکست کا حال سنا رہے تھے۔

میں نے نوجوان کو دیکھا ، جو سرود و بانسری بجا رہے تھے، اور نوخیز لڑکیاں بال کھولے، ان کے ارد گرد ، یا سین کی شاخوں تلے ناچ رہی تھیں۔

میں نے بوڑھوں کو دیکھا ، جو کھیت کاٹ رہے تھے اور عورتیں اناج کی ٹوکریاں اپنے سروں پر رکھے ، عشرت و مسرت کے راگ گا رہی تھیں۔

میں نے انسان اور دوسری مخلوق کے درمیان محبت کا رشتہ استوار پایا ، چنانچہ پرندوں اور تتلیوں کے پرے، بے خوف ہو کر انسان کے قریب آرہے تھے، اور ہرنوں کے ڈار اطمینان سے چشموں پر جھکے ہوئے تھے۔ میں نے دیکھا  تو فقیری تھی نہ  سرمایہ داری، بلکہ مساوات و اخوت کا دور دورہ تھا۔ مجھے کوئی ڈاکٹر نظر نہ آیا، اس لیے کہ اپنی سوج بھوج کی بنا  پر ، ہر شخص اپنا معالج آپ تھا۔ نہ مجھے کوئی پادری دکھائی دیا کیونکہ سب سے بڑا کاہن ضمیر تھا۔

وہاں کسی وکیل کا بھی وجود نہ تھا  کیونکہ عدالت کی جگہ فطرت نے لے لی تھی، اور وہی  محبت  اور دوستی کے عہد ناموں کی نتصدیق و توثیق کر رہی تھی۔

میں نے دیکھا: کہ انسان اس حقیقت سے آشنا ہوگیا ہے کہ وہی مخلوقات کے زاوئیے کا مرکز ہے، اس لیے وہ چھوٹی چھوٹی باتوں کی پرواہ نہیں کرتا اور زلیل حرکات سے بلند ہو گیا ہے۔ اس نے ذہنی بصیرت کی آنکھ سے شک و شبہات کے پردے ہٹا دیئے ہیں،جس کی بنا پر وہ ان عبارتوں کو پڑھنے لگا ہے، جو بادل صفحہ آسمان پر لکھتے ہیں، اور نسیم کی موجیں سطح آب پر، اب وہ پھولوں کے انفاس کی لم اور بلبل اور کوئل کے نغموں کا مطلب سمجھنے لگا ہے۔

حال کی دیواروں کے پیچھے۔۔۔۔۔ مستقبل کے اسٹیج پر میں نے دیکھا کہ جمال دولہا ہے اور روح اس کی دلہن اور زندگی اپنے تمام متعلقات کے ساتھ ان کی شب زفاف!!!!!

ملتے جلتے آرٹیکلز